ایڈن ہاؤسنگ اسکینڈل؛ انٹرپول نے چار ملزمان کے ریڈ نوٹس جاری کر دیے

06 اکتوبر 2018

eden haosng اسکینڈل؛ Interpol ne chaar mulzimaan ke red notice jari kar diye

انٹرپول نے ایڈن ہاؤسنگ اسکینڈل میں ملوث 4 مشتبہ ملزمان کے ریڈ نوٹس جاری کر دیے۔

ذرائع کے مطابق انٹرپول کی جانب سے محمد اجمد، مرتضیٰ امجد، مصطفیٰ امجد اور انجم امجد کے ریڈ نوٹسز جاری کیے گئے ہیں۔

ذرائع کا بتانا ہے کہ محمد امجد کی جانب سے قومی احتساب بیورو (نیب) لاہور سے 13 ارب روپے کی پلی بارگین کی درخواست کی گئی ہے۔

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے 26 ستمبر کو بتایا تھا کہ سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کے داماد مرتضیٰ کو ایڈن ہاؤسنگ اسکینڈل میں دبئی سے گرفتار کیا گیا ہے۔

نیب کی جانب سے گرفتاری کے نوٹس جاری ہونے کے بعد ایف آئی اے نے مرتضی کو دبئی سے گرفتار کیا گیا تھا۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی بیٹی ایڈن ہاؤسنگ اسکیم کی مالک ہے اسی لیے افتخار محمد چوہدری نے انہیں ریلیف فراہم کرنے کے لیے یہ مقدمہ خود سنا۔

وفاقی وزیر کا مزید کہنا تھا کہ اس اسکیم کے ذریعے200 سے 300 خاندان متاثرہ ہوئے اور 1000 کے قریب افراد نے اس میں سرمایہ کاری کی جن کے ساتھ دھوکہ کیا گیا۔

خیال رہے کہ رواں برس جون میں پاکستان Pakistan تحریک انصاف کی جانب سے نیب کو ایک خط لکھا گیا تھا جس میں ایڈن ہاؤسنگ اسکیم میں لوگوں کے ساتھ ہونے والے اربوں روپے کے فراڈ کے حوالے سے سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری اور ان کے اہلخانہ کے خلاف تحقیقات کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

 62