وزیراعظم آزاد کشمیر کے ہیلی کاپٹر پر فائرنگ، قومی اسمبلی میں مذمتی قرارداد منظور

02 اکتوبر 2018

wazeer e azam Azad Kashmir ke helly copter par firing, qaumi assembly mein muzamati qarardad Manzoor

آزاد کشمیر کے وزیر اعظم Prime Minister راجا فاروق حیدر کے ہیلی کاپٹر پر بھارتی Indian فوج کی فائرنگ کے خلاف قومی اسمبلی میں مذمتی قرارداد متفقہ طور پر منظور کرلی گئی۔

اپوزیشن لیڈر شہباز شریف Shehbaz Sharif کی جانب سے پیش کی جانے والی قرار داد میں کہا گیا ہے کہ آزاد کشمیر کے وزیراعظم کے ہیلی کاپٹر پر فائرنگ مقبوضہ کشمیر میں جاری ریاستی جارحیت کا نمونہ ہے اور عالمی قوانین کی بھی خلاف ورزی ہے۔

قومی اسمبلی میں اپوزیشن اورحکومت کی متفقہ قرارداد مذمت منظور کرلی گئی، قرارداد میں کہا گیا ہے کہ ایوان اس جارحیت کی سختی سے مذمت کرتا ہے۔

واضح رہے کہ وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر، چوہدری عبدالعزیز کے بھائی کی وفات پر تعزیت کیلئے گئے تھے اور تروڑی میں کنٹرول لائن کے نہایت قریب ہیلی کاپٹر میں سفر کر رہےتھے۔

وزیراعظم آزاد کشمیر کے ہیلی کاپٹر کا پائلٹ طے شدہ حد سے معمولی آگے چلا گیا جس پر بھارتی Indian چوکی پر تعینات اہلکاروں نے ہیلی کاپٹر پر فائرنگ کردی۔

دونوں افواج فوجی ہیلی کاپٹر کی ایل او سی کے نزدیک اڑنے کی اطلاع ایک دوسرےکو پیشگی دیتی ہیں لیکن گھبرائی ہوئی بھارتی Indian فوج اور میڈیا نے ہرزہ سرائی کرتے ہوئے وزیراعظم آزاد کشمیر کے سول سفید سفری ہیلی کاپٹر کو پاک فوج Pakistan Army کا ہیلی کاپٹر بنا دیا۔

خوش قسمتی سے بھارتی Indian فورسز کی فائرنگ کے نتیجے میں کوئی نقصان ہیں ہوا اور وزیراعظم آزاد کشمیر کے ہیلی کاپٹر کو بحفاظت حویلی اُتار لیا گیا۔

 94