کراچی سے ایک اور سرکاری گاڑی چوری ہوگئی

15 ستمبر 2018

Karachi se aik aur sarkari gaari chori hogayi

کراچی میں ایک اور سرکاری افسر کی گاڑی غائب ہوگئی، نامعلوم ملزمان ڈیفنس سے ملیر ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے اسسٹنٹ ڈائیریکٹر کی گاڑی چوری کرکے لے گئے، ابراہیم حیدری، جمشید کوارٹر اور پی آئی بی سے 8 ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا۔

گزری پولیس کے مطابق چوری شدہ گاڑی ملیر ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے افسر کامران کلہوڑو کی ہے جو گھر کے باہر کھڑی تھی کہ گزشتہ صبح نامعلوم ملزمان چوری کرکے لے گئے، واقعہ کا مقدمہ نامعلوم ملزمان کے خلاف گزری تھانے میں درج کرلیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ چند روز قبل درخشاں تھانے کی حدود سے میئر کراچی وسیم اختر کی سرکاری گاڑی جبکہ سچل کے علاقے سے ملزمان سندھ اسمبلی کےافسر کو الاٹ کی گئی گاڑی ان کے ڈرائیور فرحان سے چھین کر فرار ہوگئے تھے۔

دوسری جانب جمشید کوارٹر تفتیشی ٹیم نے پی آئی بی میں کارروائی کرتے ہوئے 2 ملزمان فیضان اور امجد کو گرفتار کرلیا جبکہ ملزمان کے ساتھی اختر اور کامران فرار ہوگئے۔

ملزمان نے دو روز قبل جمشید روڈ پر دو افراد سے لوٹ مار کی تھی، گرفتار ملزم فیضان چوری اور چھینے گئےموبائل فون خریدتا ہے، واردات میں ملوث ملزم اختر اور کامران کی آخری لوکیشن پنجاب کی ملی ہے،گرفتار ملزمان کے قبضے سے 3 موبائل فونز، مسروقہ سامان اور واردات میں استعمال شدہ موٹر سائیکل برآمد کی گئی ہے۔

ابراہیم حیدری پولیس نے لوٹ مار میں ملوث5 ڈکیت گرفتار کرلئے۔پولیس کے مطابق گرفتار ملزمان اسٹریٹ کرائم اور ڈکیتی کی درجنوں وارداتوں میں ملوث ہیں۔ملزمان کورنگی کراسنگ اور اطرف میں وارداتیں کرتے تھے ۔ملزمان میں یاسر،اظہر اور فیصل سمیت دیگر شامل ہیں،ملزمان کے قبضے سے اسلحہ برآمد کرکے مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔ؔ

پی آئی بی کے علاقے عیسی نگری پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے بدنام زمانہ منشیات فروش عباس مسیح کو 2 کلو گرام چرس سمیت گرفتار کرلیا۔

صفورہ چورنگی کے قریب رشتے کے تنازعہ پر فائرنگ سے عبدالحکیم نامی شخص زخمی ہوگیا۔

 41