اڈیالہ جیل، 20 منٹ تک نواز، صفدر ون ٹو ون ملاقات

18 جولائی 2018

adyalh jail, 20 minute tak Nawaz , Safdar one two one mulaqaat

لاہور: ( روزنامہ دنیا) جیل میں نواز شریف Nawaz Sharif اور کیپٹن (ر) صفدر کی گزشتہ اتوار دوپہر کے وقت 20 منٹ تک ملاقات ہوئی، اس موقع پر جیل کا کوئی ملازم قریب نہ تھا، جس کے بعد کیپٹن (ر) صفدر کو اس کی بیرک میں بند کر دیا گیا۔

جیل میں نواز شریف Nawaz Sharif باقاعدگی سے چہل قدمی کرتے ہیں، گزشتہ روز جیل کینٹین سے انہیں انڈہ، چائے اور ڈبل روٹی کا ناشتہ فراہم کیا گیا، سابق وزیر اعظم Prime Minister کے دوپہر اور رات کے کھانے کیلئے جیل کے کچن سے انکے اپنے خرچے پر بکرے کا گوشت اور دیسی مرغی کا سالن تیار کیا جاتا ہے اور روٹی جیل کے کچن سے ہی فراہم کی جا رہی ہے۔

نواز شریف Nawaz Sharif کو جیل کا کھانا بھی بھجوایا جاتا ہے جسے وہ واپس کر دیتے ہیں اس میں سے وہ صرف روٹی رکھ لیتے ہیں۔ گزشتہ روز سابق وفاقی وزیر مریم اورنگزیب نے ان سے جیل میں ملاقات کی، ملاقات کے بعد بیرک واپسی پر سابق وزیر اعظم Prime Minister کی دو مقامات پر تلاشی لی گئی جس میں میٹل ڈیٹیکٹر بھی شامل تھا۔

جیل قوانین کے مطابق ملاقات کے بعد جیل بیرک میں داخلہ پر قیدیوں کی تلاشی لی جاتی ہے تاکہ کوئی خطرناک یا غیر قانونی چیز اندر نہ جا سکے۔ باخبر ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ تاحال نواز شریف Nawaz Sharif کو کوئی غیر معمولی سہولت فراہم نہیں کی گئی۔ نواز شریف Nawaz Sharif کو سپرنگ میٹرس کے بجائے فوم کا عام گدا فراہم کیا گیا ہے۔

نواز شریف Nawaz Sharif کے کمرے کے ساتھ ایک چھوٹا سا کچن اور باتھ روم بھی موجود ہے۔ کھانے پینے کی چیزیں گرم کرنے کے لئے بجلی کا ہیٹر دیا گیا ہے، کپڑوں وغیرہ کیلئے دو سوٹ کیس بیرک سے ملحقہ کچن میں ہی رکھے گئے ہیں، نواز شریف Nawaz Sharif کی مجموعی سکیورٹی ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ جیل ملک صفدر کے ذمہ ہے۔

گزشتہ روز نواز شریف Nawaz Sharif نے بوسکی کا سوٹ زیب تن کئے رکھا، ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ نواز شریف، کیپٹن (ر) صفدر اور مریم نواز Maryam Nawaz کو جیل کی بہتر کلاس کی سہولتیں ان کی جانب سے محکمہ داخلہ پنجاب کو درخواست دینے اور ان کی منظوری کے بعد ہی دی جائیں گی۔

نواز شریف Nawaz Sharif خود ہی اپنے کپڑے تبدیل کر کے اپنے باکس میں رکھتے ہیں، زیادہ تر کپڑے پہلے سے استری شدہ ہیں، نہانے کیلئے اپنا صابن استعمال کرتے ہیں، باتھ روم کا معیار بھی عام قیدیوں جیسا ہے، بیرک میں زیادہ وقت خاموشی سے گزارتے ہیں۔

 173