ٹوئٹر اب پاکستانی صارفین کے اکاؤنٹس یکطرفہ معطل نہیں کرے گا

09 اکتوبر 2019

Twitter will no longer suspend Pakistani users' accounts unilaterally

اب سے مقبول مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر کی جانب سے پاکستانی صارفین کے اکاؤنٹس کو یکطرفہ معطل نہیں کیا جائے گا۔

حکومت کے جاری کردہ اعلامیے کے مطابق چیئرمین نیشنل آئی ٹی بورڈ صباحت علی شاہ کی امریکا میں ٹوئٹر کے اعلیٰ حکام سے تفصیلی ملاقات ہوئی جس میں حکومت پاکستان Pakistan اور ٹوئٹر انتظامیہ کے درمیان اہم معاملات طے پائے۔

اعلامیے کے مطابق آئندہ ٹوئٹر انتظامیہ پاکستانی صارفین کے اکاؤنٹس یکطرفہ معطل نہیں کرسکے گی اور کسی بھی شکایت کی صورت میں حکومت پاکستان Pakistan سے رابطہ کرے گی۔

اعلامیے میں بتایا گیا کہ ملاقات کے دوران ٹوئٹر پر بھارتی Indian اجارہ داری سے پاکستانی صارفین کی آواز دبانے کا معاملہ زیربحث آیا تھا جس میں ٹوئٹر حکام کوآگاہ کیا گیا کہ اہل کشمیر کے حق میں آواز اٹھانے پر سینکڑوں پاکستانیوں کے ٹوئٹر اکاؤنٹس بلاک کیے گئے ہیں۔

حکومتی اعلامیے کے مطابق ملاقات میں ٹوئٹر حکام کو بتایا گیا کہ کشمیر پر بھارت India کے5 اگست کے غاصبانہ قبضے کے بعد ٹوئٹر کے ذریعے بھارتی Indian غنڈہ گردی میں تیزی آئی ہے۔

ٹوئٹر انتظامیہ نے بھارتی Indian اجارہ داری کے خلاف حکومت پاکستان Pakistan کامؤقف تسلیم کرتےہوئے اکاؤنٹس معطلی کا طریقہ تبدیل کردیا ہے۔

واضح رہے کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں وزیراعظم کے تاریخی خطاب کے بعد ٹوئٹر تعریفی پیغامات سے بھر گیا تھا اس کے علاوہ ’عمران خان Imran Khan وائس آف کشمیر‘ عالمی پینل پر ٹاپ ٹرینڈ بھی گردش کررہا تھا۔

تاہم اس دوران کئی پاکستانی صارفین نے یہ شکایت کی کہ ٹوئٹر نے کشمیر کے حق میں آواز بلند کرنے پر ان کے اکاؤنٹ معطل کر دیئے ہیں یا ان کو محدود کر دیا گیا ہے۔

اکاؤنٹ معطل کیے جانے کے بعد پاکستانی صارفین نے شدید احتجاج کیا تھا اور ٹوئٹر پر انڈیا ہائی جیکڈ ٹوئٹر (IndiaHijackedTwitter#) ٹرینڈ کے ذریعے آواز اٹھائی گئی۔

متعدد صارفین نے ٹوئٹر کے شریک بانی اور سی ای او جیک ڈورسی کو بھی ٹیگ کرتے ہوئے اپنا احتجاج ریکارڈ کرایا تھا۔

x