شہبازشریف کا ڈیلی میل اورعمران خان Imran Khan کیخلاف قانونی چارہ جوئی کا اعلان

15 جولائی 2019

Shehbaz Sharif ka Daily mail and Imran Khan kay khilaf casr karne ka faisla

اسلام آباد: پاکستان Pakistan مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف Shehbaz Sharif نے برطانوی اخبار ڈیلی میل اور وزیراعظم عمران خان Imran Khan کے خلاف قانونی کارروائی کا اعلان کیا ہے۔

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف Shehbaz Sharif کا اپنے ٹوئٹر بیان میں کہنا تھا کہ ڈیلی میل کے خلاف قانونی چارہ جوئی کا فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ خود ساختہ اور گمراہ کن خبر عمران خان Imran Khan اور شہزاد اکبر کی ایماء پر چھاپی گئی لہٰذا ان دونوں کے خلاف بھی قانونی کارروائی کریں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ عمران خان Imran Khan صاحب آپ کو ابھی میری جانب سے کیے گئے 3 ہتک عزت کے دعوؤں کا جواب بھی دینا ہے۔

بے بنیاد خبر سے ساکھ کو نقصان پہنچایا گیا: ترجمان مسلم لیگ (ن)

قبل ازیں نیشنل پریس کلب اسلام آباد Islamabad میں پریس کانفرنس کے دوران برطانوی اخبار کی رپورٹ کے ردعمل میں مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ بے بنیاد خبر سے ساکھ کو نقصان پہنچایا گیا اور پگڑیاں اچھالنے والوں کو قانون کے کٹہرے میں جواب دینا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ جھوٹی خبر دینے پر برطانوی اخبار، وزیراعظم عمران خان Imran Khan اور ان کے معاون خصوصی شہزاد اکبر کے خلاف بھی قانونی چارہ جوئی کی جائے گی۔

ان کا کہنا ہے کہ برطانوی اخبار کو خبر پلانٹ کرائی گئی، اس کا ثبوت دوں گی، ڈیپارٹمنٹ آف انٹرنیشنل ڈویلپمنٹ اس خبر کی خود تردید کرچکا ہے اور اس کو جھوٹ قرار دیا ہے۔

مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ شہزاد اکبر نے ایک صحافی کو بلایا، لاہور میں رکھا اور پھر بنی گالہ بھی لے گئے جہاں عمران خان Imran Khan سے ملاقات میں اس خبر کو گھڑا گیا، برطانوی اخبار میں خبر بھی شہزاد اکبر سے منقول تھی۔

\

انہوں نے کہا کہ آج کی خبر کے پہلے پانچ پیرا گراف میں سرکاری ذرائع کے حوالے سے سب لکھا گیا، سلیکٹڈ وزیراعظم کے کرائے کے ترجمان اس خبر کا دفاع کر رہے ہیں جس کی خود ڈیپارٹمنٹ آف انٹرنیشنل ڈویلپمنٹ نے تردید کی۔

مریم اونگزیب کے مطابق شہزاد اکبر جھوٹ بول کر پھنس چکے ہیں، ان کی نوکری جانے والی ہے کیوں کہ ان کی بتائی گئی کرپشن کی رقم میں سے ایک روپیہ نہیں نکلا، عادی جھوٹوں نے جھوٹے اخبار کا سہارا لیا ہے۔

ن لیگ کی ترجمان کا کہنا تھا کہ شہزاد اکبر کیا برطانوی اخبار کے ملازم ہیں؟ جو خبر میں لکھا گیا شہزاد اکبر کے مطابق ایسا ہے، وہی گھسے پٹے الزامات ہیں جن پر شہبازشریف نیب کے عقوبت خانے میں رہ کر آئے ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ معاملہ اس وقت نوازشریف یا شہبازشریف کی ذات کا نہیں بلکہ ملک کا ہے، عمران صاحب، خدارا شہبازشریف کی حسد میں ملک کی جگ ہنسائی نہ کرائیں۔

انہوں نے کہا کہ کل پورا ملک بند تھا، کاروبار بند تھے، اس سب سے نظر ہٹانے کے لے یہ سب کیا جا رہا ہے، اصل وجہ یہ ہے ملک کو آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھ دیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ برطانوی اخبار ڈیلی میل نے ایک رپورٹ شائع کی ہے جس میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف Shehbaz Sharif کے خاندان نے زلزلہ متاثرین کو ملنے والی برطانوی امداد میں چوری کی۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان Pakistan کو دی گئی امداد میں شہباز دور میں برطانوی امدادی ادارے نے لگ بھگ 50 کروڑ پاؤنڈ پنجاب کو دیئے۔

تاہم برطانوی امدادی ادارے ڈپارٹمنٹ آف انٹرنیشنل ڈیویلپمنٹ نے اس رپورٹ کی تردید کرتے ہوئے وضاحتی بیان جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ڈیلی میل نے اپنی اسٹوری کو سچ ثابت کرنے کے لیے کم ثبوت پیش کیے۔

ڈی ایف آئی ڈی کے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ 2005 کے زلزلے کے بعد برطانیہ کی جانب سے حکومت پنجاب کے ارتھ کوئک ریلیف اینڈ ری کنسٹرکشن اتھارٹی (اررا) کو اسکولوں کی تعمیر کے لیے امداد دی گئی جو تعمیر ہوئے اور ان کا آڈٹ بھی کیا گیا۔

 83