جمہوریت ہے کیا!!!!!!!!

Hamza Meer

03 جولائی 2019



جمہوریت ہے کیا!!!!!!!!

کالم نگار:حمزہ میر!!!!!!!!

جمہوریت کا مطلب عوامی حکومت جو عوام کے ووٹوں سے منتخب ہوئی ہو اور عوام کے بارے میں سوچے عوام کے حقوق کا خیال رکھے عوام کی بنیادی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے احسن اقدام کرے ان تمام چیزوں کی زندہ مثال ترکی کی صورت میں ہمارے سامنے موجود ہے ترکی نے دنیا کو جمہوریت کی اصل تعریف بتائی کہ جمہوریت کہتے کسے ہیں طیب اردگان ترکی کے موجودہ صدر ہیں جب وہ اقتدار کی کرسی پر برجمان ہوئے تو قریب تھا کہ ترکی دیولیہ پن کا شکار ہو جاتا طیب اردگان نے ملک کو سنبھالا اور ترکی کو بیرونی قرضے سے نجات دلائی آئی-ایم-اف اور ورلڈ بینک کو اس کا قرضہ واپس کیا اپنی عوام کو سہولیات فراہم کیں تا کہ لوگ سکون سے سانس لے سکیں اور دو وقت کا کھانا کھا سکیں طیب اردگان نے ان لوگوں سے ٹیکس وصول کیا جو ٹیکس نہیں دیتے تھے ایسا ایک نصوبہ بنایا جس کے تحت ہر شخص اپنی حصیت کے تحت ٹیکس دے جس سے ترکی نے ترقی کی، سرکاری اداروں سے ان افسران کو نشان عبرت بنایا گیا اور سرکاری اداروں سے ان افسران کو نکال دیا گیا اور ان لوگوں کو اداروں میں بھرتی کیا گیا جو کرپشن اور رشوت کا پیسا حرام سمجھتے تھے اور کرپٹ افسران نے ان کو دیوار کے ساتھ لگایا تھا، اب دیکھ لیں ترکی دنیا میں اپنا الگ مقام رکھتا ہے لوگ ترقی کا مثال دیتے ہیں طیب اردگان نے ترقی کو صیحیح معنی میں فلائی ریاست بنا کر دیکھایا ترقی میں کوئی شخص بھوک رکھ کر نہیں سوتا کاروباری لوگوں کو اتنی سہولیات فراہم کی گئیں کہ وہ لوگ اپنی خوشی سے زیادہ ٹیکس دینے لگ پڑے ہیں طیب اردگان نے مشکلات میں کاروباری لوگوں کو کاروبار کرنے کے موقع فراہم کیے سیلز ٹیکس ختم کر کے قومی ٹیکس عائد کیا 5٪ ہر چیز پر جسسے ملک کو قائدہ ہوا جس سے کاروباری لوگ اپنے ملک کی اشیا دوسرے ممالک میں بھیجنے لگ پڑے اور دیکھتے ہی دیکھتے ترقی دوسری دنیا کے ممالک کی فہرست میں شامل ہو گیا اور لوگ جب اپنی ہی فوج کے خلاف باہر نکلے اور فوجی بغاوت کو ناکام بنایا- پاکستان Pakistan میں آمریت کےطرز کی جمہریت ہے ایک شخص کے گرد حکومت گھومتی ہے 2008 سے 2013 تک زرداری کے گرد 2013 سے 2018 تک نوازشریف اور اب عمران خان Imran Khan گرد باقی ممالک مین ایسے جمہوریت نہیں ہوتی بھارت India میں دیکھ لیں وزرا اپنے وزیراعظم سے سوالات کرتے ہیں ہر بندہ اپنے حصے کا کام کرتا ہے ہر بندہ اپنی ذمہ داری پوری کرتا ہے- جمہوریت میں اپنے مخالفوں پر زبردستی، جھوٹے،بےبنیاد مقدمے نہیں قائم کیے جاتے بھارت India میں بھی جھوٹے مقدمے قائم نہیں ہوتے لیکن پاکستان Pakistan میں جمہوریت بیوہ ہے کیونکہ اس ملک میں آج تک کوئی حکومت مکمل طور پرعوام کے ووٹوں سے نہیں آتی پیچھے ہاتح بڑھے بھائیوں کا ضرور ہوتا ہے دوسرے ممالک میں جب بھی جمہوری حکومت آتی ہے تو ملک ترقی کرتا ہے لیکن پاکستان Pakistan میں جب بھی جمہوریت آئیملک نیچھے کی طرف گیا اور جب بھی آمر ملک کی بھاگ دوڑ سمبھالتا ہے ملک میں ڈیم بنتے ہیں بلک ترقی کرتا ہے جمہوری حکومتوں میں کرپشن کا بازار سرگرم رہتا ہے اربوں کے سکینڈل ایسے آتے ہیں جیسے ثواب کا کام ہے ہمارےسیاستدان جمہوریت کی تعریف ہی نہیں جانتے عوام کےدرد کا احساس کرنا، لوگوں کو ان کے بنیادی حق دینا،قانون کی حکمرانی قائم کرنا،کرپشن کرنے والوں کا گریبان پکڑنا جمہوریت میں شامل ے، ہمارے ملکمیںایساکبھی وا؟ کہاں کی جمہوریت ہے کیسی جمہوریت ہے یہ،عمران خان Imran Khan بھی پرانےلوگوں کی ڈگر پر چل پرے ہیں اپنی صفوں میں کرپٹ لوگون کو نہین پکڑ رہے جن میں زبیدہ جلال 7 ارب کا سکینڈل ہے، خسرہ بختیار جو دس سال کے قلیل عرصے میں 4 کروڑ سے اربوں کے مالکبن گئے جب نیب تحقیق کرنے لگتا ہے تو نیب پر دباو ڈال دیا جاتا ہے، پرویز خٹک پر پشاور میٹرو، مالم جبہ کی سرکاری آراضی کا مقدمہ نیب میں سائے تفتیش ہے لیکن رزلٹ صفر ہے ابھی تک، موجودہ دور میں وزیر صحت عامر کیانی پر 50 کروڑ کی براہ راست پیسے لینے کا سکینڈل بنا اور خان صاحب نے صرف وزارت سے فارغ کیا اور کچھ نہیں کہاں ہے وہ عمران خان Imran Khan جو کرپٹ اور چوروں کو نہیں بخشتا تھا اپوزیشن کے تو تمام بڑھے لوگ پکڑے جا رہے ہیں یہ جمہوریت نہیں ہے خان صاحب یہ تو آمریت کی شکل میں جمہوریت ہے صاحب اور پاکستان Pakistan میں یہ ہی جمہوریت واقع ہے شکریہ---

 37