آرٹیفیشل انٹیلیجنس دوست یا دشمن

کھٹی میٹھی کرنیں - کرن خان

23 جون 2019

Artificial Intelligence Friends or Enemy

آرٹی فیشل انٹیلجنس کن کن منصوبوں پر کام کر رہی ہے ذرا ان کا جایزہ لیتے ہیں ۔

۔1: مصنوعی زہانت کے حامل روبوٹس کو مستقبل کے حوالے سے پیش گوئی کے لیے ڈیزاین کیا جاسکتا ہے۔ساینسدانوں نے ایک سپر کمپیوٹر "ناو ٹیلس" میں اسامہ بن لادن کے متعلق لاکھوں خبریں فیڈ کیں تو اس نے 200 کلومیٹر کی درستی کے ساتھ اسامہ بن لادن کے مقام کا اندازہ لگایا تھا۔اسی طرح mogia نام کے مصنوعی زہانت کے نظام نے پچھلے تین امریکی الیکشنز اور صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے صدر بننے کے بارے میں درست تجزیہ لگایا تھا۔

۔2: انسانوں کی ایجاد کردہ مصنوعی زہانت کارکردگی میں انسانوں سے بہتر اور فعال ثابت ہو سکتی ہے۔۔اکسفورڈ یونیورسٹی میں ساینسدانوں کے بناے گئے AI کے نظام نے انسانی ہونٹوں کی حرکت کو انسانوں سے زیادہ بہتر طریقے سے پڑھا۔یہ انسانوں سے بہتر مطالعہ کرسکتی ہے۔

3:ایک زہین مشین اپنے سے ایڈوانس مشین تخلیق کرسکتی ہے اسکا سوفٹ وئیر زیادہ ذہانت سے لکھ سکتی ہے اور یہ عمل مسلسل جاری رہ سکتا ہے۔فیس بک نے چیٹ باکس کو ایک دوسرے سے گفتگو کرنے کے لیے تخلیق کیا جلد ہی یہ آپس میں گفتگو کر رہے ہونگیں۔

4: روبوٹس کو اب شہریت دی جانے لگی ہے اس عمل نے انسانوں پر روبوٹس کی حکومت کے خطرے کو بڑھا دیا ہے۔۔

۔5:لوگ مشینوں اور روبوٹس سے جذباتی لگاو رکھنے کی وجہ سے دوسرے انسانوں سے بات چیت کم کر رہے ہیں۔بہت سے فوجی بم ڈسپوزیبل روبوٹس سے اتنا لگاو رکھتے ہیں کہ ان سے انسانی شخصیات کی طرح برتاو کرتے ہیں۔

۔6: مصنوعی ذہانت پر چلنے والی آٹو میٹک کار کی پروگرامنگ ہیک یا تبدیل کرکے کسی کی جان لینا بڑا مسئلہ نا ہوگا۔۔

7:مصنوعی ذہانت انسانوں کو حقایق سے دور کرسکتی ہے۔موت انسانی زندگی کی بہت بڑی حقیقت ہے لیکن اب مصنوعی ذہانت نے ایک اور آپشن بھی فراہم کردیا ہے کہ AI سے مرنے والوں کی سیمولیشن تیار کی جا رہی ہے۔۔

۔۔8: مصنوعی ذہانت کی وجہ سے قانون،ادویات اور فنانس کے شعبے اب انسانوں کے لیے سازگار نہیں سمجھے جاتے۔

9: بڑے پیمانے پر فوج میں روبوٹس کے استعمال پر کام جاری ہے۔۔ان کے خیال میں انسانوں کی بجاے روبوٹس سے جنگ کروائی جاے گی تو انسانی جانوں کا نقصان بھی نہیں ہوگا اور جنگ بھی روبوٹس کی وجہ سے زیادہ مضبوطی سے لڑی جاے گی۔آٹو میٹک اسلحے سے لیس ڈرونز سے لے کر فوج تک ۔اس بات کی گارنٹی کون دے گا کہ ان کے آرمی روبوٹس کی پروگرامنگ کو ان کے ہی خلاف کر دیا گیا تو یہ اپنے ہی ملک میں تباہی نا کھڑی کردیں گے؟چند کوڈز ہی کا تو سارا کھیل ہوگا۔

۔10 : جاپان اور چین China میں سیلیکون سے بنے نرم و نازک خوبصورت اور پرکشش فیمیل اور خوبرو میل روبوٹس متعارف کرائے گئے ہیں۔۔۔۔یہ مردو و عورت سے دوستی۔۔افئیر کرسکتے ہیں مزید ان کا کیا کام ہے اس تفصیل میں پڑنا نا مناسب ہے۔۔پڑھنے والے خود ہی سمجھدار ہیں۔۔ جب ان روبوٹس میں جدید AI سسٹم بھی ڈال دیا گیا تو پھر انسانوں کو ایک دوسرے میں کس حد تک دلچسپی رہ جاے گی ؟؟ ایک غیر ملکی سروے کے مطابق جہاں یہ خرافات بن رہی ہیں اگلے پچاس سال کے اندر ہر چار میں سے ایک بندہ ان روبوٹس میں دلچسپی لینے پر مجبور ہوگا۔۔

۔11: آٹو میٹک اسلحہ کی تیاریاں بھی اختتامی مراحل میں داخل ہو چکی ہیں ۔۔خود کار مشین گنز کو جو بندہ مشکوک لگا یہ خود اس کا کام تمام کردے گیں۔۔ یہاں بھی ایرر کے چانسز موجود ہیں۔

۔12:روبوٹ انسانوں کی نسبت تیزی سے کام کریں گے بغیر تھکے اور نا ہی کوئی اجرت طلب کریں گے۔۔تو بڑے پیمانے پر ان کو ہائیر کیا جاے گا جس کی وجہ سے بے روزگاری میں اضافہ ہوگا۔۔

یہ تو تھیں چند فیلڈذ جہاں AI پر کام شروع ہوچکا ہے اور کامیابی سے جاری ہے۔۔اب چاہیں یہ لوگ مانیں یا نا مانیں اور تردید کرتے رہیں لیکن شواہد جو ہمارے سامنے ہیں ان کو رد بھی نہیں کیا جاسکتا۔۔

۔اس ٹیکنالوجی کے حق میں بھی کافی لوگ دلایل دے رہے ہیں ۔۔بہرحال اس کے کیا فواید ہیں کیا نقصانات وہ توظاہر ہے آہستہ آہستہ سامنے آتے جائنگیں۔۔سائنس کے لیے ان بیسٹ وشز کے ساتھ بات کا اختتام کرتےہیں کہ ان کی یہ تخلیقات ان کے لیے مصیبت ثابت نا ہوں۔

لیکن ایک بات طے ہے کہ AI نے بہت ترقی کرنی ہے۔۔یہ ترقی کہاں پر رکے گی یہ ہم نہیں جانتے ۔ ایک حدیث مبارکہ کا حوالہ دینا چاہونگی ۔۔جس کے مطابق فرمان نبوی ؐ ہے کہ "قیامت قائم نا ہوگی یہاں تک کہ انسان کے جوتے کا تسمہ اس سے بات کرے گا ۔۔بے جان چیزیں انسان سے کلام کریں گی ۔۔پھر انتظار کرنا کہ آخری وقت نزدیک ہوگا " اس حدیث کے تناظر میں دیکھا جاے تو کیا یہ AI کی طرف اشارہ نہیں ہے؟ بے جان چیزوں کا کلام کرنا ہی تو مصنوعی ذہانت کا شروعاتی قدم ہے۔۔۔قدرت کے ساتھ لڑائی تو یہ لوگ کر رہےہیں ۔۔یہ لوگ بھول رہے ہیں کہ فطرت کو خود بھی واپسی لڑنے کی عادت ہے ۔۔تب ظاہر ہے جیت طاقتور کی ہوگی۔۔

 187