لنک کھولیں تماشہ دیکھیں

کھٹی میٹھی کرنیں - کرن خان

21 مئی 2019

Click in link and see

دور حاضر میں سوشل میڈیا پر جو چیز سب سے زیادہ شہرت پا چکی ہے وہ ہے لنک نامہ۔۔ہر بندے کی دلچسپی کے مطابق ٹاپک سے ریلیٹڈ تصویر یا ویڈیو اور ساتھ میں آدھی ادھوری خبر ۔۔خبر ایسی سنسنی خیز ہوگی کہ بندہ کئی بار تجسس میں لنک ضرور اوپن کرتا ہے ۔۔اور تقریبا ہر بار بے مزہ ہوتا ہے۔۔

عورتوں کی دلچسپی میں سب سے زیادہ اوپن لنک موٹاپے کو کم کرنے اور گورے رنگ یا مصری حسن پانے کے دعوے پر مشتمل ہوتے ہیں۔۔

مثال کے طور پر " بغیر ورزش کے وزن کنڑول کریں"اور لنک کھولو تو لکھا ہوگا ورزش نہیں کرنی تو مر کر خوراک کم کریں "

صرف آٹھ دن میں دس کلو وزن گرائیں ۔" یہ لنک چند ایسی عجیب وغریب جڑی بوٹیوں کے شربت پر مشتمل دوائی بتاے گا جس پنساری سے جا کر مانگو تو وہ ناپید جڑی بوٹی بتا کر جواب دے دے گا اور آپ کے پاس آخری حل یہ بچے گا کہ یا تو افریقہ Africa کے جنگلات میں جا کر ڈھونڈیں ۔۔یا لنک پر لعنت بھیج کر بھول جائیں "۔

"سلکی بال صرف پینتس روپے میں کیسے ممکن"اور اس ترکیب پر عمل کر لو تو بال بدنما جھاڑو میں تبدیل ہوجاتے ہیں اور بندہ اپنے بالوں کا انجام دیکھ کر رو اٹھتا ہے

۔"سدا جوان رہنے کا راز مل گیا " اور یہ لنک ہم عورتیں بزرگ ہوں تب بھی کھول کر دیکھ لیں گی۔

۔" چار فٹ تک بال بڑھائیے" لو حد ہے چار فٹ لمبے بالوں کا کرنا کیا ہے ؟؟ شیمپو کنڈیشنر کے خرچے میں ہی مردوں کی عمر تمام ہو جاے ۔۔۔

خوبصورت بننے کے ٹوٹکوں کا تو اس قدر سنسنی کے ساتھ لنک دیا جاتا ہے کہ ہمارا جینامرنا حرام ہوجاتا ہے جب تک کھول کر نا دیکھ لیں۔۔ایسے ہی چند لنکس کے جھانسے میں مجھے بھی اچھی خاصی خواری ہوئی تھی۔۔جیسا کہ ایک بار ایک لنک دیکھا کہ کچن کے عام استعمال کی چیزوں سے ماسک بنائیے پھر تماشہ دیکھیے ۔۔انگریڈنٹس سارے موجود تھے لہذا میں نے فٹ سے وہ ماسک تیار کیا کہ دیکھا جاے کیا تماشہ ہوتا ہے ۔۔

اس کی تعریفیں اتنی کیں کہ۔بھابھی بھی متاثرین ٹوٹکہ میں شامل ہوگئی۔۔پہلے اپنے چہرے پر لگایا پھر بھابھی کے۔۔۔چند منٹ گزرے ہونگے ہمارے چہروں پر شدید جلن ہونے لگی۔۔فٹ سے منہ دھوڈالے لیکن شام تک ہماری اسکن نے احتجاجی طور پر چند پمپلز کا تحفہ ہمیں دے دیا۔۔لنک دینے والوں پر غصہ بھی بہت آیا۔ جی چاہا باز پرس کی جاے۔لیکن ان سے کیا بعید آگے سے کہہ دیتے کہ "ہمارا کیا قصور ہم نے تو وارننگ دی تھی کہ یہ ماسک لگاو اور تماشہ دیکھو۔۔"

اس طرح ایک بار ایک لنک میں سردیوں کی موئسچرائزنگ کریم بنانے کی ترکیب بتائی گئی جس کے استعمال سے خشکی کا مکمل خاتمہ بتایا گیا تھا۔ ساری قدرتی چیزیں تھیں لہذا سائیڈ ایفیکٹ کا ڈر بھی نا تھا ۔۔میں نے اسی دن کریم کا پراسس شروع کردیا۔ ایک بڑے سے جار میں ایلو ویرا جیل ڈالا اور اس جیل میں دس چیزیں مزید وقفے وقفے سے ڈال کر اچھی طرح یکجان کیا ۔جب اس ملغوبے نے پیسٹ کی شکل اختیار کرلی۔۔میں نے سیو کرکے رکھ دی ۔۔بے غیرتوں نے یہ کہیں نا واضح کیا تھا کہ اس کریم کی ایکسپائری ڈیٹ کیا ہوگی ۔۔اور نتیجہ یہ نکلا کہ پانچ چھے دن کے بعد اس کریم پرمصیبت کے آثار شروع ہوے پہلے کریم کا رنگ کالا ہوا اگلے دن پانی چھوڑ دیا اور اس سے اگلے دن اس میں پھپھوندی لگ چکی تھی۔۔۔سخت صدمہ ہوا اور اس کے بعد ان لنکس پر عمل کرنے سے میں نے تو توبہ کرلی۔

چند اور مشہور ترین اشتھارات میں صحت مند رہنے اور بیماریوں سے نجات پانے کے طریقے سرفہرست ہوتے ہیں ۔ایسا ہی ایک لنک پچھلے دنوں میرے ماموں نے ابو کو اس اصرار کے ساتھ واٹس ایپ کیا کہ عمل لازمی کرنا ہے۔یہ ایک ایسی ویڈیو تھی جس کے مطابق صبح نہار منہ چار گلاس گرم پانی پینے سے ہر بیماری سے نجات مل جاتی ہے اور بندہ فٹ ہوجاتا ہے۔۔ویڈیو میں دعوی ایسا یقینی انداز لیے ہوے تھا کہ میرے ماں باپ نے من وعن عمل شروع کردیا ۔۔۔ایک دن صبح صبح امی کے پاس کام سے جانا ہوا تو کیا دیکھتی ہوں ابو جی بیڈ پر نڈھال پڑے ہیں اور امی جی پریشانی سے گلاس ہاتھ میں لیے بیٹھی ہیں۔

۔میں نے پریشانی سے استفسار کیا"کیا ہوا آپ لوگ ٹھیک تو ہیں نا؟؟؟" ابو جی نے نقاہت سے پڑے پڑے جواب دیا " بیٹا ماموں تمہارے نے ہماری بیماریوں کا علاج بھیجا ہے اسی پر عمل کیا۔۔اب تمہاری ماں روز ایک دیگچی پانی کی گرم کرتی ہے۔ خود تو رو پیٹ کر دو گلاس پیتی ہے۔۔مجھے چار پلا دیتی ہےاور اس کے بعد بیٹا تین چار گھنٹے مجھ سے نا کچھ کھایا جاتا ہے نا پیا جاتا ہے۔۔۔

" کیا۔۔۔۔؟ . او مائی گاڈ چار گلاس "۔۔۔۔میں نے چکرا کر امی کو دیکھا " او یار آپ لوگ اپنے حواسوں میں ہو کے نہیں ؟؟

آپ کی عمر میں صبح سب سے پہلے ہیلتھی سے ناشتے کی ضرورت ہوتی ہے نا کہ پانی سے پیٹ بھر کر بیٹھ جاو ۔۔۔حد ہے یہ طریقہ کس نے بتایا آخر ؟؟؟ اگر منہ نہار پینا ہی ہے تو ایک آدھ گلاس پانی پی لیں اور بس پھر ناشتہ کریں۔۔بہرحال میں نے ان کو سختی سے اس ٹوٹکے سے روکا ۔۔اس طرح ان کا ناشتہ بحال ہوا ۔اور یہ پھر سے کچھ ایکٹو ہوے۔

۔۔۔لنک کھلوانے کے لیے آدھی سے زیادہ بے بنیاد بے تکی ریسرچز اور مبالغے پر مبنی ٹوٹکوں سے ذلیل کیے رکھتے ہیں بس۔۔ان کے خلاف کوئی ایکشن ہونا چاہیے۔۔۔تاکہ یہ عوام کو بے وقوف بناتے ہوے سو بار سوچیں۔۔

یاد آیا ۔۔ان لنکس کی ایک اور قسم بھی ہے جو سپیڈ آف لائٹ سے اوپن کیے جاتے ہیں ۔۔ان لنکس کا متن کچھ یوں ہوتا ہے۔۔

" ایسا اسلامی ملک جہاں حکومت خود چار شادیاں کراے گی"

" دوسری شادی کا قانون اسمبلی میں پیش ہوگیا کب تک عمل ہوگا ؟؟۔۔"

" بیوی کو راضی کرنے کے دس آسان طریقے "

" بیوی کو شاپنگ سے بیزار کرنے کے بارہ طریقے"

" عورت کی نفسیات سمجھنا ہوا بہت آسان "

"خوب صورت اور پرکشش اداکارہ منظر عام پر "

"دلکش خواتین کو کیسے مرد پسند ہوتے ہیں"

تو سن لو بھائیو بکواس ہے بکواس لنکس تو کھل جاتے ہیں ملتا ان سے بھی ککھ نہیں۔

 97