تم ہی سے اے مجاہدو جہاں کا ثبات ہے

کھٹی میٹھی کرنیں - کرن خان

18 مئی 2019

Tum he say ay Mujahidon jahan hai

مارکیٹ سے ریلیٹڈ چند کام تھے اور بچے کی طبیعت ناساز تھی اس کا دوا لینا تھا۔لہذا بھائی کو ساتھ لیا کہ آدھ ایک گھنٹے کا کام ہے۔جمعہ نماز سے پہلے آجائیں گے۔ مین روڈ پر پہنچے تو روڈ کراس کرنے کے لیے رکنا پڑا وجہ تھا آرمی کا لمبا چوڑا convoy(قافلہ) ۔۔۔ تقریباً بیس سے پچیس ٹرک اور آٹھ دس جیپیں تھیں۔ میرے بیٹے کو آرمی سے شدید محبت لہذا یہ ایک ایک گاڑی کو والہانہ انداز سے ہاتھ ہلا ہلا کر ٹاٹا کرنے لگا ۔۔

ان تمام ٹرکوں اور جیپوں والے اسی والہانہ انداز میں مسکرا کر ہاتھ ہلا ہلا کر گزرتے گئے۔۔

۔مجھے اپنا بچپن یاد آگیا ۔بہاولپور چھاونی اور کینٹ قریب ہی تھا لہذا تقریباً روز یہ ٹرک گزرتے اور ہم بلا ناغہ روز ہاتھ ہلا کر سلام کرتے اور فوجی لوگ بھی روز ہمیں مشفقانہ مسکراہٹ کے ساتھ جواب دے کر گزرتے۔۔۔کہنے کو یہ ایک چھوٹا سا عمل تھا لیکن یہ بہت گہرے اثرات رکھتا ہے۔۔

۔اس روڈ پر دن کے تقریبا بارہ بجے میرے بچے کے علاوہ اور کوئی بچہ نا تھا۔۔لیکن انہوں نے اس ایک بچے کو بھی وہی پروٹوکول دیا ۔۔یہ لوگ چہروں پر دوستانہ مسکراہٹ رکھتے ہیں۔۔بچوں کے ساتھ تو انتہائی پیارا رویہ رکھتے ہیں۔۔ ان کو دلوں میں گھر کرنے کے لیے کسی خاص محنت کی ضرورت نہیں ہوتی ۔۔یہ لوگ اپنے پیشے اپنے ملک کے ساتھ آخری حد تک مخلص ہوتے ہیں۔۔

بے شک ہمیں اپنی فوج سے محبت ہے اس بات پر فوج مخالف طبقہ نالاں رہتا ہے ۔لیکن ہمیں محبت کیوں ہے؟؟

اس بات کا جایزہ کیوں نہیں لیتے۔۔۔آئیں ذرا ان اعتراضات کا پوسٹ مارٹم کرتے ہیں ۔

۔۔سب سے بڑی تکلیف ان کو یہ ہوتی ہے فوج کا بجٹ زیادہ ہے اور ہماری فوج Highest military budget ۔خرچ کرنے میں شمار ہوتی ہے۔۔۔یہ سراسر بکواس ہے اور کچھ نہیں۔۔اب وہ دور نہیں رہ گیا کہ کوئی منہ اٹھا کر کچھ بھی کہہ دے اور عوام کو پاگل بنا لے ۔۔اسی حوالے کو لے کر آج ریسرچ کی تو کہیں پر بھی مجھے ہائی بجٹ میں اپنے ملک کی فوج نظر نا آئی ۔۔پہلے پندرہ بیس ملکوں میں بھی نا ملی البتہ ہائی بجٹ میں انڈیا کا پانچواں یا چھٹا نمبر ضرور تھا پاکستان Pakistan کا نام تک نظر نا آیا ۔ڈوب مرنا چاہیے جھوٹ باندھنے والوں کو ۔

۔۔۔یہ اعتراض کرنے والوں کو گریبان میں جھانکنے کی اشد ضرورت ہے۔۔ملک میں جتنے بھی گورنمنٹ کے اداروں میں لوگ کام کرتے ہیں سب ہی معاوضہ لے کر کرتے ہیں کون فی سبیل اللہ ملک پر احسان کر رہا ہے؟؟ کیا پولیس نہیں لیتی؟؟ ڈاکٹر نہیں لیتے؟ پی آئی اے ریلوے ' بینکس 'ٹیچرز کونسا ایسا ادارہ ہے جو تنخواہ نہیں لیتے تاکہ فوج نا لے۔۔۔حکومت تو سب پر خرچ کرتی ہے ۔۔ڈیفینس جیسے مظبوط ادارے پر کرنے میں کیا تکلیف ہے؟؟؟

جیسے فوجیوں کے بچے رہتے ہیں ویسے ہی کالونیاں تو ہر ادارے میں بنا دی جاتی ہیں۔۔فوجی اگر آپ کو زیادہ بجٹ لینے والے دولت مند نظر آتے ہیں تو باقی اداروں کے ملازمین کی جایداد کیوں نظر نہیں آتی؟؟؟ جس سرکاری افسر کے گھر چھاپہ پڑے دولت کے ڈھیر نظر آتے ہیں ۔اس وقت کیوں اندھے بن جاتے ہیں؟؟۔

دوسرا اعتراض کینٹ میں نہیں گھسنے دیتے ۔۔سختی کرتے ہیں۔۔۔ ان کے بیوی بچے رہ رہے ہوتے ہیں آپ نے گھس کر کرنا کیا ہے؟؟؟

سیکیورٹی کینٹ کی زیادہ الرٹ ہوتی ہے تو آپ کو کیا تکلیف ہے ؟؟ سیکیورٹی اس لیے الرٹ ہوتی ہے کہ یہ لوگ خود سرحدوں کی حفاظت کرتے ہیں۔لہذا ان کے بیوی بچوں کی حفاظت تو ریاست کی زمے داری بنتی ہے نا ؟؟پھر بھی سی ایم ایچ بھی جاتے ہو علاج بھی کراتے ہو ان کے سکولوں کالجوں میں بھی پڑھتے ہو اور رونا بھی ڈالے رکھتے ہو۔۔

اگر مقابلہ ہی کرنا ہے تو سب اداروں میں میرٹ کیوں نہیں پرکھ لیتے؟؟ فوج میں کوئی ایک آدھ کالی بھیڑ نکل آے تو چیخ چیخ کر آسمان سر پر اٹھا لیں گے یہ کیوں نہیں دیکھتے کہ باقی ادارے کالی بھیڑوں سے بھرے پڑے ہیں ان بھیڑوں میں انسان اوکھا ملتا۔۔۔وہاں کیوں منہ پر تالہ لگ جاتا ہے؟؟؟ ایمانداری اور فرض شناسی کیا صرف فوج کی ذمے داری ہے؟؟

سارے اداروں کو ان کے ہی لوگ چاٹ کر کھا گئے بچ گیا تو یہی آرمی کا شعبہ۔۔۔عادتیں اپنی نہیں سدھارنی تکلیف آرمی سے ہے۔۔اپنی ذمے داریوں کا احساس کرتے تو آج آرمی آنکھ میں نا کھٹکتی۔

۔ایک اور اعتراض یہ بھی ہوتا کہ آرمی ملکی معاملات میں مداخلت کرتی ہے۔۔۔ شرم ہوتی تو یہ اعتراض کیوں کرتے۔۔ڈھٹائی تو ختم ہے ان لوگوں پر۔

۔ملک پر کوئی آفت ٹوٹے یا کوئی سانحہ ۔۔سب سے آگے یہ فوج ہوتی ہے۔۔تب تو غیرت نہیں آتی کہ یہ فوج کی ذمے داری نہیں۔

۔۔حالات خراب ہوں تو آپ کی حکومتیں ہاتھ جوڑ کر فوج سے مدد مانگتی ہیں تب بھی حیا نہیں آتی۔

۔آپ تو ایک کراوڈ کو کنٹرول کرنے کی صلاحیت سے بھی محروم ہوتے ہیں وہ بھی فوج ہی سے کنٹرول کرواتے ہیں۔

۔آپ سے تو سنگیں نوعیت کے فیصلے تک نہیں ہو پاتے اس لیے اب فوجی عدالتیں بنائیں کہ اس معاملے میں بھی فوج مدد کرے۔

۔یہی فوج جب آپ کے ہاتھوں ملک کو یرغمال بنتا دیکھ کر کوئی اسٹیپ اٹھا لے۔۔یا کرپٹ لوگوں کےخلاف کوئی ایکشن لے لے۔۔تب موت لاحق ہونے لگ جاتی ہے ۔۔ اپنی نا اہلی کیوں نہیں نظر آتی؟؟ فوج سے بغض نکالنے میں تو ماہر ہوتےہیں۔۔ غیر جانبداری سے دیکھا جاے تو اتنا نقصان ہمیں ڈیکٹیٹرشپ نے نہیں پہنچایا جتنا جمہوریت نے پہنچایا ہے۔

۔۔کبھی طاقت ور اور بہترین افواج کی رینکینگ میں بھی اپنی فوج کو ڈھونڈیں ۔۔پہلی دس بارہ فوجوں میں شامل ہوگی۔۔تب ان کو بتاتے ہوے سانپ سونگھ جاے گا۔۔۔اللہ ہماری افواج کا حامی و ناصر ہو۔۔۔ایسے ہی رہیں۔۔قوم کے دلوں سے محبت نہیں نکل سکتی۔۔ہماری دعائیں آپ کے ساتھ ہیں۔۔

 206