قصہ خیالی محاذ کا۔۔۔۔

نغمئہ بےصدا - زیمشا سید

15 مارچ 2019

qissa khayaali mahaaz ka. .. .

ایک جنگ وہ ہوتی ہے جو فضائی،سمندری یا زمینی محاذ پر لڑی جاتی ہے اور ایک جنگ "خیالی محاذ" یعنی کہ سوشل میڈیا پر لڑی جاتی ہے۔۔۔PubG کے میدان میں شجاعت کے جھنڈے گاڑنے والے سپاہی سینہ تان کر خود کو "virtual warrior" تصور کرتے ہیں اور چلتے پھرتے دشمن کے دانت کھٹے کرتے رہتے ہیں۔۔۔

گذشتہ ایک ماہ سے جاری کشیدگی نے اس ناچیز کو بھی اس فن "حرب" میں طاق کردیا۔۔۔دشمن سے ہونے والی ہر جھڑپ کے بعد دل قائد اعظم کا مزید احسان مند اور شکر گزار ہوجاتا ہے اگر پاکستان Pakistan نہ ہوتا تو ہمارا کیا ہوتا۔۔۔ بس یہ احساس اور جذبہ جنون بیدار!! پھر دل پھڑک پھڑک کے کہتا ہے ہاؤ از دا جوش !!!

اگر آپ بھی دشمن کے دانت کھٹے کرنا چاہتے ہیں تو کچھ اہم نکات ذہن نشین کرلیں

سب سے پہلی بات تو یہ کہ دشمن کی صفوں میں دو اقسام کے نمونے پائے جاتے ہیں۔۔۔

ایک وہ جن کی ذہنی نشونما اور اخلاقی تربیت نہ ہونے کے برابر ہوتی ہے۔۔یہ صرف گالی دیتے اور مذاق اڑاتے ہیں انکے پاس دلیل کا نام و نشان نہیں ہوتا بس الزام در الزام۔۔بے تکی memes اور لغویات!!

انکے منہ لگنے کی بالکل ضرورت نہیں ہوتی کیونکہ جتنی مرضی کوشش کرلیں آپ انکے لیول تک نہیں گر سکتے۔۔۔

دوسری قسم ان لوگوں پر مشتمل ہے جو پہلے انتہائی سنجیدگی سے مدبرانہ انداز میں مکمل دلائل کے ساتھ آپ پر دہشتگردی کا الزام لگاتے ہیں۔۔اسامہ بن لادن،حافظ سعید اور مسعود اظہر پر تبرا پڑھتے ہیں ۔۔جواب میں آپ اگر آپریشن سائیکلون سے لے کر کلبھوشن یادو تک کی داستان انکے سامنے رکھیں تو وہ پھر آپکو ناکام ریاست ہونے کے طعنے دینگے قرضے۔۔ بھکاری۔۔ اکانومی جی ڈی پی کا راگ الاپیں گے جواب میں آپ گوگل بابا کی مدد لے کر بھارت India کے بیرونی قرضے دکھادیں تو پھر وہ پہلی قسم والے بن جاتے ہیں وہی گالیاں،memes اور ہی ہی ہا ہا !! اسکے لیئے ناچیز نے خاص طور پر ایک "اسلحہ ڈپو" بنا رکھا ہے جسمیں کشمیری مظالم سے لے کر ٹوائلٹ پوجا تک ہر قسم کا آتھینٹک مواد موجود ہے اور جہاں لگے کہ تیل کم پڑ رہا ہے تو کسی اپنے جیسے سرپھرے کو آواز دے لینا خاصہ کارگر ثابت ہوتا ہے کہ ایک سے بھلے دو!!

معروف اینکر ارشد شریف کی اہلیہ جویریہ بھی آن لائن جہادیوں میں شامل ہیں۔۔۔گذشتہ دنوں بھارتی Indian پائلٹ کی واپسی کے بعد ہونے والی واہ واہ کی سرمستی میں موصوفہ نے عمران خان Imran Khan اور نریندرا مودی کا "یدھ" کروا ڈالا۔۔۔وائے قسمت پانچ دن کا ٹائم فریم بھی رکھ دیا۔۔۔خان صاحب 80% ووٹ لیکر آگے تھے اور یہ عالم شوق کا ڈاکٹر صاحب سے دیکھا نہ گیا جھٹ سے اعلان کر دیا کہ جو جیتے گا میں دو دن تک اسکی تصویر ڈی پی لگاؤں گا۔۔۔جانے کیسے خبر سرحد پار پہنچ گئی اور بھارتی Indian فوج نے پول پر دھاوا بول دیا۔۔۔ گھمسان کا رن پڑا

کہاں بھارت India کی ایک سو بیس کڑوڑ عوام۔۔۔انٹرنیٹ استعمال کرنے والے نوے فیصد ۔۔

کہاں پاکستان Pakistan کی بائیس کڑوڑ آبادی اور انٹرنیٹ صارفین چالیس فیصد اسمیں بھی ٹویٹر صارفین مشکل سے دس فیصد۔۔۔

مقابلہ تو دل ناتواں نے خوب کیا!! باقاعدہ ووٹ مانگے جاتے رہے گروپس میں اور آخر کار وہی ہوا جو ہونا تھا۔۔۔

پھر ڈاکٹر نبیل چودھری کی شامت آگئی۔۔۔ویسے تو دانتوں کے ڈاکٹر ہیں لیکن پارٹ ٹائم میں فری لانس memes بناتے ہیں بھارتی Indian سوشل میڈیا آرمی نے ڈاکٹر صاحب کا جینا دوبھر کردیا۔۔۔گالیوں پہ گالیاں۔۔۔چیلنج پہ چیلنج **** لگا نا مودی جی کی فوٹو!!!

اپنوں نے حوصلہ دیا کہ بھائی آئندہ ایسا دعوی نہ کرنا۔۔۔۔ سبق سیکھو سبق

اور دشمن انباکس تک پہنچ گیا۔۔۔

ایک رحم دل پری سے ڈاکٹر صاحب کی درگت بنتی دیکھی نہ گئی تو اس نے اپنے خزانے سے ایک فوٹو مفت مشورے کے ساتھ پیش کردی۔۔۔اگلا مرحلہ آسان تھا PAF میوزیم میں لٹکے یونیفارم کے ساتھ مودی کو فریم کر کے وار ٹرافی کے طور پر دکھایا تب جاکر دشمن کی توپیں ساکن ہوئیں !!!

بازیچہ اطفال ہے دنیا میرے آگے

ہوتا ہے شب و روز تماشہ میرے آگے

 183