سایہ خدائے ذوالجلال

نغمئہ بےصدا - زیمشا سید

14 مارچ 2019

Saya o Khudaya o Zul Jalal

بابا جی کہا کرتے تھے کہ پاکستان Pakistan کی مثال صالح علیہ سلام کی اونٹنی جیسی ہے۔۔۔اللہ کا خاص کرم ہے اس پاک سرزمین پر۔۔۔دنیا کے شاطر ترین دماغ حیراں و پریشاں ہیں اسرائیل کا جدید ترین spice-2000 میزائل جو کم از کم پانچ کلومیٹر تک کا علاقہ مکمل تباہ کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔۔۔ زمین پر آ گرتا ہے لیکن پھٹتا نہیں ۔۔۔ اور پاکستان Pakistan کے ہاتھ وہ ٹیکنالوجی مفت میں لگ جاتی ہے جس پر بھارت India نے اربوں لٹائے ہوتے ہیں۔۔۔ریورس انجینئرنگ زندہ باد!!

بھارتی Indian طیارے جس مدرسے کو نشانہ بنانے آئے تھے وہ وہیں موجود ہے لیکن پے لوڈ دور کہیں گرتا ہے۔۔۔جدید کمپیوٹرائزڈ میزائل سسٹم میں غلطی کی گنجائش قطعا نہیں ہوتی جو ٹارگٹ لاک کیا جاتا ہے میزائل سیدھا وہیں جاکر ہٹ کرتا ہے۔۔۔سوال پھر بھارتی Indian پائلٹس کی ناقص تربیت پر آجاتا ہے!! جن کی ٹریننگ بس جہاز سے کودنے تک محدود ہے۔۔۔

بھارتی Indian پائلٹ ابھی نندن کی رہائی پر بھارتی Indian میڈیا کے پراپیگنڈے کے زیر اثر مخالفین نے بہت اعتراض اٹھائے وقتی طور پر عوام بھی مایوس نظر آئی کہ اتنی جلدی رہا نہیں کرنا چاہیئے تھا لیکن وقت نے ثابت کیا کہ یہ ایک بہترین فیصلہ تھا جس سے پاکستان Pakistan کو عسکری کے بعد اخلاقی محاذ پر بھی برتری ثابت کرنے کا موقع ملا۔۔۔اور ساتھ ہی بھارت India کو بلوچستان Balochistan میں ناکامی کا پروانہ ڈاکٹر فریحہ بگٹی کی صورت میں دکھایا گیا جسے بھارت India کا جنونی میڈیا ابھی نندن کی بیوی بتاتا رہا!!

کچھ لوگوں نے یہ بھی اعتراض اٹھایا کہ بدلے میں کرنل حبیب کو بھارتی Indian قید سے رہا کیوں نہیں کروایا گیا تو انکے لیئے عرض ہے کہ کرنل حبیب جنگی قیدی نہیں ہیں ان پر جنیوا کنونشن کا اطلاق نہیں ہوتا اور نہ ہی اسوقت بھارت India ایسی کوئی ڈیمانڈ ماننے والا تھا وہ تو جنگ کے لیئے ماحول بنارہا تھا۔۔۔۔ جن لوگوں کو اب تک نہیں معلوم ہو سکا ان کی اطلاع کے لیئے بتانا ضروری ہے کہ پاکستان Pakistan ایئرفورس نے انکے گھر میں گھس کر مارنے والے خواب کو عملی جامہ بھرپور انداز میں پہنایا ۔۔۔چھ ٹارگٹ "انگیج" کیئے تین جہاز اور ایک ہیلی کاپٹر تباہ کرنے کے علاوہ اصل سرپرائز آرمی چیف کے لیئے تھا

اتنا کچھ ہوگیا بھارتی Indian آرمی چیف منظر سے غائب ہے۔۔۔آخر کیوں؟

ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ جموں میں ایک ہائی پروفائل میٹنگ کے دوران دشمن پر حملے کی پلاننگ ہو رہی تھی کہ ریڈار نے "لاک" ہونے کی اطلاع دے دی۔۔۔حاضرین کے پاس اتنا ہی وقت تھا کہ آنکھیں بند کر کے بھگوان سے معافی تلافی کرلیتے۔۔۔اور پھر فضا دھماکوں سے گونج اٹھی۔۔۔ہیڈ آفس کے اطراف میں ہونے والے "بے ضرر" دھماکوں نے سرپرائز کا بھر پور اعلان کیا!!

قیاس ہے کہ موصوف اب تک شاک کی کیفیت سے نکل نہیں پائے اسلیئے میڈیا کا سامنا کرنے کی ہمت نہیں کر پا رہے!! مودی جی روانی مین اپنی شکست فاش کا اعتراف کچھ یوں کرگئے کہ آج اگر رافیل ہمارے پاس ہوتے تو ہمارا "یہ حال" نہ ہوتا جبکہ انڈین ڈیفنس منسٹری نے باقاعدہ "انفارمیشن وارفیئر برانچ" کا نوٹیفیکشن جاری کردیا ہے۔۔۔اس سے ہمیں دو باتیں پتہ چلتی ہیں

1- بھارت India جنرل آصف غفور سے خاصا امپریس ہوا ہے

2- جنگ کے بادل چھٹنے والے نہیں ہیں

بھارت India اسرائیل اور امریکہ United States ۔۔۔جی ہاں وہ تیسرا ملک امریکہ United States کے علاوہ کوئی ہو بھی نہیں سکتا ۔۔۔ یہ تینوں تھنک ٹینکس سر جوڑ کر بیٹھے جنگ کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔۔۔اہداف اور طریقہ کار تبدیل ہوگیا ہے جنگ صرف کچھ عرصے کے لیئے ٹلی ہے۔۔۔خطرات پہلے سے بڑھ گئے ہیں۔۔۔

باقی نقصان ایک طرف۔۔اسرائیلی پائلٹ کا پاکستانی تحویل میں ہونا اور اس خبر کا لیک ہوجانا اسرائیل کے لیئے بہت بڑا دھچکہ ہے اسلیئے بھارت India اور اسرائیل زخمی ناگ کی طرح پھنکار رہے ہیں۔۔۔

مودی نے جو آگ اپنی الیکشن کیمپین کو گرمانے کے لیئے لگائی تھی اسکی تپش اب یہ پورا خطہ جلانے کو ہے۔۔۔۔بھارتی Indian بحریہ کے سابق سربراہ ایڈمرل رام داس نے الیکشن کمیشن کو لکھے خط میں بالا کوٹ حملے کو فوج کی اقدار کے خلاف کی جانے والی سیاسی کاروائی قرار دے دیا اور مودی کے خلاف کاروائی کا مطالبہ بھی کیا ہے۔۔۔

بھارت India کے اندر سے ہی اب آوازیں اٹھنا شروع ہوگئی ہیں لیکن جب تک امبانی مودی کے ساتھ کھڑا ہے کوئی مودی کا بال بھی بیکا نہیں کرسکتا۔۔۔امبانی ایمپائر میں اتنی طاقت ہے کہ وہ میڈیا کے ڈریعے "جنتا" کو ٹرک کی بتی کے پیچھے لگائے رکھے۔۔۔۔غضب خدا کا کراچی میں ہیٹ سٹروک کا شکار ہونے والوں کی ایدھی سنٹر میں رکھی میتیں اور کوئٹہ دھماکے کے مقتولین کی اجتماعی قبریں دکھا کر کہہ رہے ہیں کہ یہ بالاکوٹ میں مرنے والے لوگ ہیں جنہیں پاکستان Pakistan کی حکومت میڈیا پر نہیں لا رہی۔۔۔توبہ توبہ!!!

ویسے آجکل قدرت ہم پر کچھ زیادہ ہی مہربان ہے۔۔۔کہیں سمندر میں تیل دریافت ہورہا ہے تو کہیں دشمن شکار پہ شکار ہورہے ہیں۔۔۔‏ہلمند، افغان ایران Iran سرحد کے قریب امریکی و افغان فورسز کے ملٹری بیس جہاں مبینہ طور پر را کا ہیڈکوارٹر بھی تھا 11 حملہ آوروں کے فدائی حملوں میں 137 امریکی ،50 سے زائد را اور NDS کے اہم افسران ہلاک ہوگئے

پاکستان Pakistan نے بھارت India کی "کولڈ سٹارٹ ڈاکٹرائن" کا توڑ پہلے ہی نکال رکھا تھا اور اسی کا غصہ افغان فوج نے بے گناہ پاکستانیوں کو شہید کر کے نکالا ہے۔۔۔غیر مصدقہ اطلاعات کے مطابق امریکی B52 طیارے بھی ہلمند حملے میں تباہ ہوئے جو مبینہ طور پر پاکستان Pakistan پر حملے کے لیئے تیار تھے۔۔۔

امریکہ United States دو منہ کا سانپ ہے۔۔۔ایک منہ سے اس نے پاکستان Pakistan کی تعریف کی تو دوسرے سے ویزا شرائط مزید سخت کردیں اور اطلاعات یہ بھی ہیں کہ "بلیک واٹر" کو پھر سے افغانستان Afghanistan میں لایا جارہا ہے۔۔ آنے والے دنوں میں آپکو اگر متحرک پشتین کے ساتھ سندھ کارڈ بھی چلتا پھرتا نظر آئے۔۔کرپشن بچاو مہم بھی زور پکڑے اور ملک خانہ جنگی کی طرف جاتا دکھائی دے تو گھبرانا نہیں ہے۔۔۔

پاک فوج Pakistan Army دہشتگردی کے خلاف جنگ کی بھٹی سے کندن بن کر نکلی ہے۔۔۔ اور اس پاک سر زمین پر سایہء خدائے ذوالجلال ہے اور تا ابد قائم رہے گا!!!

 412