پاک انڈو جنگ میں یہ پھاپے کٹنی کون؟

کھٹی میٹھی کرنیں - کرن خان

07 مارچ 2019

پاک انڈو جنگ میں یہ پھاپے کٹنی کون؟

انڈین میڈیا کو دس منٹ بھی دیکھ لیں تو یہی محسوس ہوتا ہے کہ پاک بھارت کشیدگی بڑھتی ہی جا رہی ہے۔ انہوں نے سٹوڈیوز میں ایسے حالات پیدا کیے ہوتے ہیں کہ اب جنگ ہوئی کہ تب۔۔بندہ ان حالات سے گھبرا کر اپنے نیوز چینل لگا لے یہ امن پسندی کا درس دے رہے ہوتے ہیں۔البتہ انڈین میڈیا کی بد زبانی سے تنگ آکر شرارتی سی مسکراہٹ چہرے پر سجا کر آنکھوں کی زبانی پوچھتے ہیں " تسی رل وی گئے ہو تے بچیا وی ککھ نہیں"

آج نیوز دیکھی کہ ان کی ایک آبدوز حقوق کی پامالی کرتےہوے پائی گئی جس کو شرافت کی زبان میں سمجھایا گیا کہ "جا سمرن جی لے اپنی زندگی" اور یہ واپس روانہ ہوگئی ۔ اصولا ً ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ اس آبدوز کو پھڑ لیتے عملے کو لے آتے چائے پلاتے ۔اچھے اچھے کپڑے بدلوا کر لاہور واہگہ بارڈر سے روانہ کر دیتے۔۔لیکن ہم نے پھر بھی انڈین میڈیا کی عزت رہنے دی کہ جب آبدوز والوں کو پکڑ لیا یہ تو خود پر پٹرول چھڑک کر آگ لگا لیتے۔۔

ہم جتنا جنگ سے اجتناب کر رہے ہیں پی ایم مودی کو اتنا ہی وحشی طریقے سوجھ رہے ہیں۔۔بہرحال جب ان کا میڈیا اور عوام جنگ کے نقصانات سے نہیں ڈر رہی اور مسلسل ایک ہی ڈیمانڈ کہ مر جاو یا مار دو کی رٹ لگائی ہوئی ہے تو موسٹ ویلکم۔ہمیں شہادت کی موت مل جاے اور کیا چاہیے۔۔

ایک اندر کی خبر معلوم ہوئی دو تین پہلے ۔۔گوکہ اب اندر کی خبر نہیں رہی سب کو معلوم ہوگی ۔۔وہ یہ کہ انڈیا نے ہم پر حملے کی منصوبہ بندی کی ہوئی تھی ہمیں انٹیلی جنس اداروں کے زریعے پتہ چلا ۔ہم نے جوابی تیاری کرکے پیغام بھجوایا جس پر انڈیا کو پلان کینسل کرنا پڑا۔۔اس سارے قصے میں اہم چیز تھی انڈیا کو دو ملکوں کی سپورٹ ۔۔

ایک تو بتایا گیا اسرائیل دوسرے کا نام نہیں دیا گیا ۔۔اب یہ نام واضح کیوں نا کیا گیا یہ تو ہم نہیں جانتے یا یہ سمجھا جاے کہ اینٹلی جنس کو بھی علم نہیں کہ کون ہے وہ تیسرا اہم دشمن ؟؟ بہرحال اس بات کو لے کر سوشل میڈیا پر بہت قیاس آرائیاں ہوئیں کہ تیسرا دشمن کون ہے؟ بہرحال ہمیں کوئی خصوصی صدمہ تو نہیں پہنچا کہ دشمن زیادہ ہیں۔۔ہم پہلے سے جانتے ہیں کہ کافی بے غیرتوں کو ہم شروع دن سے کھٹکتےہیں۔

۔لیکن دیکھنا یہ ہے یہ کمینگی کی کس ملک نے ؟؟ تیسرے دشمن ملک کے حوالے سے پہلے نمبر پر امریکہ دماغ میں جگمانے لگتا ہے ۔۔کیونکہ ہمارے تعلقات بھی تقریبا ایسی بہو والے رہے ہیں " جہیڑھی وسدی وی نہیں تے نسدی وی نہیں" اب یہ بہو امریکہ ہے یا پاکستان خود اندازہ لگا لیں۔۔

دوسرے نمبر پر شک کیا گیا ایران پر ۔۔کیونکہ ہمارا مسلمان ہمسایہ ملک ہونے کے باوجود ہم ایک دوسرے کے لیے پریشانی کا باعث رہتے اکثر وپیشتر۔۔دشمنوں کی لسٹ میں اس کا نام لیا گیا لہذا تعلقات پر غور و فکر کی ضرورت تو ہے پھر۔۔

تیسرا ملک جو شک کی زد میں آیا وہ ہے افغانستان۔۔جی ہاں وہ ملک جو گردش حالات کی زد میں رہا ۔۔ ہم نے غلطیاں بھی کیں سپورٹ بھی کیا ۔۔امریکہ کو اڈے بھی دیے ان سے ہمدردی بھی رہی۔۔ان کو جاے پناہ بھی دی اور مدد بھی ۔ اس جنگ میں افغانستان کے ساتھ ساتھ ہم نے بھی بہت نقصان اٹھائے ۔۔نوٹس لینا چاہیے ۔۔۔گوکہ امید تو نہیں کہ ہماری قربانیاں بھول کر افغانستان صرف غلطیاں یاد رکھے گا۔۔

امریکہ کا ابھی نندن کے واقعے کے بعد سے انڈیا کا مذاق اڑانا اور ہماری مسلسل ستائش والا رویہ یہ ہمیں خوش کرنے کے ساتھ ساتھ بھارت کو تاو چڑھا رہا ہے مسلسل ۔۔اور یہ مزید ہذیان بکنا شروع کردیتے ہیں۔۔امریکہ کو ہماری قابلیت پر خوشی ہوئی غم یا حیرانگی یہ فی الحال سمجھ میں نہیں آرہا ۔۔خیر امریکہ پر نظر رکھنے کہ ضرورت نہیں ہے ہمیں۔۔اگر یہ وہ تیسرا ملک ہے تو انڈیا جلد یا بدیر پھٹ پڑے گا " پھاپے کٹنی کہیں کے تم بھی تو شامل تھے سازش میں ،،،!" بہرحال پاکستان کو مسلسل زچ کرنے کا انجام اچھا نا ہوگا۔۔ فیاض چوہان کی زبان میں کہا جاے تو " ابے بے غیرتو ہم نے تنگ آکر نیوکلئیر بم تم تین سہیلیوں پر چھوڑ دینے ہیں ۔۔اور خود بھی شہید ہوجانا ہے تمہارے ہاتھوں "

 239