ہنستا بنستا گھر اجڑ گیا: کراچی میں بریانی کھا کر کوئٹہ سے آئے 5 بچے جاں بحق

22 فروری 2019

hanstaa hanstaa ghar ujar gaya : Karachi mein beryani kha kar queta se aaye 5 bachay jaan bahaq

کراچی: (دنیا نیوز) کراچی میں فوڈ پوائزنگ کا ایک اور واقعہ سامنے آگیا۔ ہوٹل کے مبینہ مضر صحت کھانے سے ایک اور ہنستا بنستا گھر اجڑ گیا، کراچی میں بریانی کھا کر کوئٹہ سے آئے 5 بچے جاں بحق جبکہ خاتون ہسپتال میں زیر علاج ہے۔

پولیس کے مطابق متاثرہ فیملی کا تعلق کوئٹہ سے ہے۔ جاں بحق بچوں میں ڈیڑھ سال کا عبدالعلی، 4 سالہ عزیز فیصل، 6 سال کی عالیہ، 7 سال کا توحید اور 9 سال کی صلویٰ شامل ہیں۔ کوئٹہ سے تعلق رکھنے والی فیملی نے صدر کے مقامی ہوٹل میں قیام کیا، فیملی نے قریبی ریسٹورنٹس سے بریانی منگوائی تھی، بریانی کھانے کے بعد تمام افراد سو گئے، رات کو 3 بجے بچوں کی والدہ کی طبعیت خراب ہوئی، آغا خان ہسپتال لایا گیا جن کو ایڈمٹ کر لیا گیا تھا۔

جب فیملی ممبر واپس ہوٹل پہنچے تو 5 بچے مردہ حالت میں پائے گئے، صبح تقریبا 8 بجے 5 بچوں کو بھی آغا خان ہسپتال شفٹ کیا گیا۔ ڈاکٹرز کے مطابق بچوں کی اموات کی وجہ رپورٹ آنے کے بعد واضح ہو گی۔

ادھر حکام نے صدر میں نوبہار ریسٹورنٹ اور اس سے ملحقہ دکانیں بند کرا دیں۔ پولیس کی ابتدائی کارروائی کے بعد ریسٹورنٹ سیل کیا جائے گا، سندھ فوڈ اتھارٹی کا عملہ اور پولیس ریسٹورنٹ میں موجود ہے، کھانے کے سیمپل حاصل کئے جا رہے ہیں، ڈیپ فریزر میں گوشت اور دیگر اشیا کے سیمپل لئے جا رہے ہیں، فیملی نے کیا کھایا، کب بنایا گیا، ملازمین سے تفتیش جاری ہے۔

 151