Add new Article

وزیراعظم اور وزیر خزانہ میں سے ایک کو گھر جانا ہوگا: پیپلز پارٹی

06 دسمبر 2018

contentModel.content.description

اسلام آباد: (دنیا نیوز) پیپلز پارٹی رہنماوں کا کہنا ہے کہ ڈالر مہنگا ہونے پر وزیراعظم اور وزیر خزانہ کے بیانات میں تضاد ہے، دونوں میں سے ایک کو گھر جانا ہوگا، دھکا سٹارٹ حکومت نے پارلیمنٹ کومفلوج کر دیا، 100 دن بعد بھی قومی اسمبلی میں پبلک اکاونٹس کمیٹی نہیں بنائی گئی، حکومت کے پہلے 100 دن میں دیواریں گرانے، بھینسیں اور مرغی، انڈوں کی بات ہوئی۔

وفاقی دارالحکومت میں پیپلزپارٹی کے رہنماوں نے دھواں دھار پریس کانفرنس کی۔ فرحت اللہ بابر نے کہا کہ ملک میں بحرانی کیفیت مزید بڑھ چکی ہے، انتخابی دھاندلی سے متعلق نئے انکشافات سامنے آئے ہیں۔ فافن کی آڈٹ رپورٹ میں دھاندلی کا انکشاف ہوا ہے، الیکشن کمیشن کا فافن کی رپورٹ پر ردعمل مضحکہ خیز اور ناقابل قبول ہے۔ ڈالر مہنگا ہونے پر وزیراعظم اور وزیر خزانہ کے بیانات میں تضاد ہے، دونوں میں سے ایک کو گھر جانا ہو گا۔

سینیٹر شیری رحمن نے پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی کے 100 دنوں میں ڈالر کی قیمت دوبار بڑھی جبکہ عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں کمی ہوئی جس کا فائدہ عوام کونہیں پہنچ رہا۔ 100 دن میں دیواریں گرانے، بھینسیں اور مرغی، انڈوں کی بات ہوئی، اتنے روز گزرنے کے باوجود بھی قومی اسمبلی میں پبلک اکاونٹس کمیٹی نہیں بنائی گئی۔

شیری رحمن نے مزید کہا کہ ہم نےگزارش کی تھی کہ پارلیمان کے ذریعے ملک کو چلائیں مگر پی ٹی آئی کی حکومت نے پارلیمنٹ کو مفلوج کر دیا ہے، احتساب کے لبادے میں انتقام کی سیاست کی جا رہی ہے۔