نوازشریف کا نیب سےعلیمہ خان کی جائیداد کی چھان بین کا مطالبہ

28 نومبر 2018

Nawaz Sharif ka neb se Alima Khan ki jaedad ki chhaan bain ka mutalba

اسلام آباد: (دنیا نیوز) سابق وزیراعظم نواز شریف Nawaz Sharif نے نیب سے وزیراعظم کی ہمشیرہ علیمہ خان کی جائیداد کی چھان بین کا مطالبہ کر دیا. انھوں‌نے سوال اٹھایا کہ علیمہ خان کے پاس دبئی میں اربوں روپے کی جائیداد کہاں سےآئی, ان کا تو کوئی ذریعہ آمدن بھی نہیں، علیمہ خان نے جائیداد چھپانے پر جرمانہ ادا کیا، یہ این آر او نہیں.

نوازشریف کا کہنا ہے کہ قوم جاننا چاہتی ہےعلیمہ خان کی جائیداد کے پیچھے کون ہے، علیمہ خان کے پاس دبئی میں اربوں روپے کی جائیداد کہاں سے آئی، ان کی جائیداد کا منی ٹریل کیا ہے۔ علیمہ خان کے پاس تو کوئی ذرائع آمدن بھی نہیں۔ سابق وزیراعظم نے ننیب سےعلیمہ خان کی جائیداد کی چھان بین کا مطالبہ کر دیا۔ نوازشریف نے سوال اٹھایا کہ عمران خان Imran Khan کی بہن نے جائیداد چھپانے پر جرمانہ ادا کیا، یہ این آر او نہیں۔

قبل ازیں نواز شریف Nawaz Sharif فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت کیلئے احتساب عدالت پہنچے تو مسلم لیگ ن کے رہنماؤں نے ان کا استقبال کیا۔ احاطہ عدالت میں وکلاء سے مشاورت کرتے ہوئے نواز شریف Nawaz Sharif نے کہا کہ اتفاق فاؤنڈری 50 کی دہائی میں زرعی آلات بنا رہی تھی اور 60 کی دہائی میں آلات برآمد کرتی تھی۔ ان سب باتوں کے کئی گواہ بھی موجود ہیں۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ انھوں نے والد کے کہنے پر 1967 میں عراق، ایران Iran اور سعودی عرب Saudi Arabia کا دورہ کیا۔ 1962 میں لاہور کی پہلی امریکن شیورلے گاڑی ان کے والد نے خریدی تھی جبکہ لاہور کی پہلی اسپورٹس کنورٹ ایبل مرسڈیز کار ان کے لیے منگوائی گئی تھی۔

نواز شریف Nawaz Sharif نے اپنے اسٹاف کو اتفاق فاؤنڈری کی تفصیلات تیار کرنے کی ہدایت کی تو پرویزرشید نے رائے دی کہ عدالت میں ہمارا مقدمہ یہ نہیں۔ اتفاق فانڈری کے قیام اور برآمدات کی باتیں گپ شپ کی حد تک کے لیے ٹھیک ہیں۔

نواز شریف Nawaz Sharif نے اپنے وکیل خواجہ حارث سے اتفاق فاؤنڈری کے ملازمین کو بطور گواہ پیش کرنے سے متعلق مشاورت کی تو خواجہ حارث نے بعد میں مشاورت سے فیصلہ کرنے کا مشورہ دیا۔

 36